Nabeela Ahmed

Word

Don’t say anything else

Let me spend the day with this word

Let me gently drip it inside me

Slowly so those wounds which are deep

Can bear it

Those parts inside me that have dried and cracked

Don’t start sobbing

Don’t start screaming with pain

With restlessness and excitement

They are not use to love

They haven’t received a word in centuries

Don’t say anything else now

Let me spend the day with this word

لفظ

نبیلہ احمد

اور کچھ مت کہو

مجھے اِس لفظ کیساتھ دن گزارنے دو

اِسے قطرہ قطرہ اپنے اندرٹپکانے دو

آہستہ سے، تاکہ وہ زخم جو بہت گہرے ہیں

وہ سہ سکیں

میرے اندر کےحصے جوسوکھ کر پھٹ چکے ہیں

وہ بلک نہ پڑیں

چلا نہ اُٹھیں، درد سے

بیکراری اور بیتابی سے

وہ پیار کے عادی نہیں

اِنہیں لفظ ملے صدیاں بیت گیں

آج اور کچھ نہ کہو

مجھے اِس لفظ کیساتھ دن گزارنے دو

Leave your comment !