کنٹرول لائن عبور کرنے والے شہریوں کی واپسی کے اقدامات کئے جائیں، پریس فار پیس

مظفرآباد ( پی ایف پی نیوز ) انسانی حقوق اور پائیدار ترقی کے لئے کوشاں ادارے پریس فار پیس نے حکومت پاکستان سے مطالبہ کیا ہے کہ لائن آف کنٹرول غلطی سے عبور کر کے مقبوضہ کشمیر جانے والے آزاد کشمیر کے شہریوں کی واپسی کے لیے اقدامات کیے جائیں - ایک بیان میں پریس فار پیس کے ترجمان نے کہا کہ حالیہ عر صے میں دو الگ الگ واقعات میں نکیال اور سماہنی سے عام شہری غلطی سے سرحد پار چلے گئے اور انڈین حکام نے انھیں گرفتار کر کے جیل بھیج دیا ہے ۔ پی ایف پی کے ترجمان نے خدشہ ظاہر کیاہے انڈین آرمی ان شہریوں کو جعلی مقابلے میں علیحدگی پسند قرار دے کر شہید کر سکتی ہے ۔

پاکستان کی وزارت خارجہ کو فوری طور پر ان شہریوں کے رہائی کے لیے سفارتی اقدامات اٹھانے چاہییے- پریس فار پیس نے مزید کہا کہ لائین آف کنٹرول پر آۓ روز بھارتی فائرنگ کے پیش نظر شہریوں کے بچاؤ کے لیے ضروری اقدامات اٹھائے جائیں ۔طبی مراکزمیں ایمبولینس اور جدید آلات دیے جائیں -

یاد رہے کہ گزشتہ ہفتے نکیال سیکٹر سے ملک عبدالرحمان غلطی سے سیز فائر لائن عبور کر گیا تھا اور ایک اور واقعےمیں سماہنی میں راجہ حبیب سرحد پار چلا گیا ہے - خاندانی ذرائع کے مطابق دونوں شہریوں کا ذہنی توازن درست نہیں_ لائین آف کنٹرول پر ماضی میں بھی ایسے واقعات ہو چکے ہیں۔