زرعی ترقی کے لیے کمیونٹی موبلائزیشن ناگزیر ہے، خواجہ مسعود اقبال

رپورٹنگ : اورنگزیب جرال ، مظفرآباد

زرعی ترقی کے لیے کمیونٹی موبلائزیشن ناگزیر ہے  جبکہ محکمہ زراعت کے اعلیٰ حکام اور اہلکاران شجرکاری کے علاوہ دیگر زرعی معاونت کے لیے مقامی لوگوں کی مدد کے لیے ہمہ وقت تیار ہیں۔ ان خیالات کا اظہار ڈائریکٹر زراعت  خواجہ مسعود اقبال نے  شجرکاری آگاہی مہم کے شرکا سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے بتایا کہ محکمہ زراعت آزاد کشمیر موسم ِبہار کی شجر کاری مہم کے لیے متحرک ہو چکا ہے۔

ڈائریکٹر خواجہ مسعود اقبال اور  ڈپٹی ڈائریکٹر مبشر سیف نے آمدہ شجرہ کاری کے سلسلے میں آگاہی کے لیے وادی کوٹلہ کے گاوں چھکڑیاں اور مچھیارہ  کا دورہ   بھی کیا ہے۔  جبکہ  چیر ی اور اخروٹ کی شجرکاری کے آغاز کے لیے محکمے کے افسران نے  اٹھمقام میں ایک فیلڈ میٹنگ کا بھی انعقاد کیا ہے۔  وادی کوٹلہ کے دورے میں محکمہ زراعت کے افسران کے علاوہ مقامی صحافیوں اور  عمائدین نے بھی شرکت کی۔ جن میں  مرزا اورنگزیب جرال، مرزا راشد ،ڈاکٹر سمیرا عباسی  ، رانا ذیشان اور خوشحال خان شامل تھے۔

محکمہ زراعت کے افسران  نے مچھیارہ کے گاوں چھکڑیاں میں مقامی کمیونٹی کو شجرکاری  سے متعلق موبالائز کرنے کے لیے آگاہ کرنے اور کسان کمیٹیاں قائم کرنے سے متعلق رہنمائی کی. چھکڑیاں کے مقام پر ہونے والی میٹنگ میں مرزا حسن ، ملک فقیر اللہ، چوہدری غلام سرور، ملک جان محمد، مرزا منظور، چوہدری منظور، مرزا لطیف جرال ،مرزا مرتضی، مرزا عبدالرشید جرال، مرزا اشفاق عبداللہ، ملک بشیر، ملک نذیر اور ملک منظور بھی موجود تھے۔

 اس موقع پر ڈائریکٹر زراعت خواجہ مسعود اقبال نے مقامی کسانوں کو  بتایا کہ محکمہ زراعت کے اعلی حکام اور اہلکاران شجرکاری کے علاوہ دیگر زرعی معاونت کے لیے مقامی لوگوں کی مدد کے لیے ہمہ وقت تیار ہیں مگر یہ  مقامی کسانوں پر ہے کہ وہ کیسے محکمہ زراعت سے مدد لے سکتے ہیں انہوں نے کہا کہ عام آدمی کا فرض ہے کہ وہ زرعی معاونت سمیت محکمہ کی جانب سے  زراعت کے فروغ کے لیے جاری  پروجیکٹ سے متعلق معلومات حاصل کریں ۔

اس قسم کی پیشہ ورانہ معلومات کی مدد سے عوام   اپنے  علاقے میں زراعت کو پہلے سے بہتر بنانے کے لیے اقدامات کر سکیں  گے۔  اس موقع پر ڈپٹی ڈائریکٹر مبشر سیف کا کہنا تھا کہ چھکڑیاں گاؤں کی آب و ہوا چیری و اخروٹ سمیت دیگر پھلدار پودوں کے لیے موزوں علاقہ ہے جس بنا پر محکمہ زراعت اس گاؤ ں کو زرعی اعتبار سے ماڈل گاؤں  بنانے کے لیے تمام اقدامات اٹھائے گا۔