خواتین کے ساتھ زیادتی کے واقعات پرپولیس کی مجرمانہ غفلت

posted Jan 7, 2013, 1:25 PM by PFP Admin   [ updated Jan 7, 2013, 1:30 PM ]
انھوں نے کہا کہ اقوام متحدہ کی تحریک پر آزاد کشمیر میں
 حال ہی میں تشکیل دیا گیا ویمن کیمشن ابھی تک خواتین کے حقوق کے تحفط اورمصائب کاشکار عورتوں کی داد رسی میں ابھی ناکام رہا ہے اس سلسلے میں پریس فار پیس پاکستان اور متعلقہ عالمی فورمزاور حکام پر اس ادارے کی کارکردگی کا معاملہ اٹھائے گی۔انھوں نے مطالبہ کیاکہ حکومت آزاد کشمیر ویمن کیمشن کو فعال بنائے اور عورتوں کی بہبود کے لیے عملی اقدامات کئے جائیں۔انھوں نے سول سوسائٹی سے اپیل کی ہے کہ وہ راولاکوٹ کے اس مظلوم خاندان کو انصاف کی فراہمی کے لیے اپنی انسانی ذمہ داری پوری کرے اور ہر فورم پر اس غیرانسانی واقعے کے خلاف آواز اٹھائی جائے تاکہ ملوث افراد کو قانون کے شکنجے میں لا یا جائے۔



ادارے کے ترجمان نے اپنے بیان میں ضلع پونچھ میں گل     گجراں کی ایک خاتون کے ساتھ مبینہ زیادتی کے واقعے پر شدید دکھ کا اظہار کرتے ہوے کہا ہے کہ بندوق کی نوک پر اس طرح کے شرمناک واقعات قانون کی حکمرانی کے ذمہ دار اداروں کے منہ پر تماچہ ہے ۔ شہریوں کے جان، مال
 ا ور عزت کی حفاظت کی ذمہ دار ریاست اور اس کے ادارے ہیں جو قوم کے ٹیکسوں کی آمدنی سے تنخواہیں اور مراعات لینے کے باوجوداپنے بنیادی فرائض کی انجام دہی میں بری طرح ناکام ہو چکے ہیں۔ترجمان کا کہنا ہے کہ اگر حکومت اور پولیس نے قانون شکن افراد کی ہوس کا نشانہ بننے والی خاتون کو انصاف فراہم نہ کیا تو انسانی حقوق کے عالمی اداروں تک آواز اٹھائی جائے گی۔

 پائیدار ترقی اور قیام امن کے لیے کوشاں غیر سرکاری ادارے پریس فار پیس نے خبردار کیا ہے کہ اگر حکومت کی طرف سے خواتین کے ساتھ تشدداور زیادتی کے واقعات پرپولیس کی مجرمانہ غفلت اور مجرموں کو متعلقہ اداروں کی جانب سے کھلی چھوٹ دینے کی روش جاری رہی تو معاشرے میں شدید بگاڑ پیدا ہو گا 
جس کی زد میں ہرکوئی آ ئے گا۔


Comments