آزاد کشمیر: انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں پر پریس فار پیس کی تشویش

posted Aug 10, 2012, 6:41 PM by PFP Webmaster   [ updated Aug 10, 2012, 6:53 PM by PFP Admin ]

میڈیا، خواتین،بچوں اور چھوٹی برادریوں کے افراد کے خلاف تشدد،قتل اور املاک کو جلانے کے واقعات میں تشویش ناک اضافہ 

حکومتی غفلت اس بات سے بھی عیاں ہو جاتی ہے کہ حکومت کے متعلقہ ادرے عدلیہ کی سب سے معتبر شخصیت پر حملے کے حقیقی کرداروں تک کو کیفر کردار تک پہنچانے میں ناکام رہے ہیں۔ ترجمان نے مزید کہا کہ متعلقہ ادارے تفتیشی نظام کو جدید دور کے تقاضوں سے ہم آئنگ کریں۔ 

پریس فار پیس کے ترجمان نے روزنامہ
دھرتی کے سب ایڈیٹرحار ث قدیر پر ایک مذہبی طلبہ تنظیم کے کارکنوں کے تشدد اور پانیولہ کے صحافی مسعودگردیزی کے گھر پر فائرنگ کے واقعات کی شدیدالفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہا کہ ایسا لگ رہا ہے کہ آزاد کشمیر میں اقتدار پر بیٹھے لوگوں کے نزدیک ان پرتشدد واقعات کی کوئی اہمیت نہیں ہے۔ترجمان کا کہنا تھا کہ تنظیم آزاد کشمیر میں انسانی حقوق کی صورت حال پر نظر رکھے ہوئے ہے جس میں یہ دیکھا گیا ہے کہ خواتین،بچوں اور چھوٹی برادریوں کے افراد کے خلاف تشدد،قتل اور املاک کو جلانے کے واقعات میں تشویش ناک اضافہ ہوا ہے لیکن قانون نافذ کرنے والے اداروں کی کارکردگی مایوس کن ہے ۔
ر اولاکوٹ ( پی ایف پی رپورٹ
پریس فار پیس نے آزاد کشمیر میں صحافیوں پر حملوں سمیت انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کے بڑھتے ہوئے واقعات پرگہری تشویش کااظہار کرتے ہوئے حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ شہریوں کے جان ومال کے تحفظ کو یقینی بنائے۔اس ضمن میں شہریوںِ، بالخصوص عورتوں پرحملوں، بے گناہ افرادکے قتل اور بعض با اثر خاندانوں کی طرف سے اقلیتی برادریوں کے افراد کو جان سے مار ڈالنے ، املاک کوجلانے جیسے واقعات میں ملوث ملزمان کو قانون کے کٹہرے میں لاکر متاثرین کو فوری انصاف فراہم کیا جائے ۔
میں شہریوںِ، بالخصوص عورتوں پرحملوں، بے گناہ افرادکے قتل اور بعض با اثر خاندانوں کی طرف سے اقلیتی برادریوں کے افراد کو جان سے مار ڈالنے ، املاک کوجلانے جیسے واقعات میں ملوث ملزمان کو قانون کے کٹہرے میں لاکر متاثرین کو فوری انصاف فراہم کیا جائے 
 
Comments