امن کانفرنس نئی دہلی میں اختتام پذیر

posted Aug 28, 2012, 5:09 PM by PFP Admin   [ updated Sep 1, 2012, 2:04 AM ]

 نئی دہلی:  پریس فار پیس کے ڈائریکٹر راجہ وسیم کاوسکمپ فاوٗنڈیشن کے زیراہتمام پاک بھارت امن کانفرنس کے شرکاء کے ساتھ گروپ فوٹو

کانفرنس کے شرکاء نے پاک بھارت کشیدگی کو کم کرنے کے لیے سول سوسائٹی کے کردار کو فعال بنانے کے عزم کا اظہار کیا

Apps Script Gadget


کانفرنس کے شرکاء نے پاک بھارت کشیدگی کو کم کرنے کے لیے سول سوسائٹی کے کردار کو فعال بنانے کے عزم کا اظہار کیا اور ہندوستان اور پاکستان کی حکومتوں پر زور دیاکہ وہ کشمیر،پانی،سیاچن سمیت تمام حل طلب مسائل کے حل کے لیے بامقصداور نتیجہ خیزبات چیت اور ڈائیلاگ کاراستہ اختیارکریں۔

اختتامی اعلامیے میں مزید کہا گیاکہ ہندوستان اور پاکستان کی حکومتیں اپنے باہمی اختلافات کو فوری طور پرپرامن ذرائع سے حل کرکے اپنے دفاعی بجٹ میں خاطر خواہ کمی لائیں اور یہ وسائل خطے میں جہالت،بیماری،بسماندگی کے خاتمے،عوام کا معیارزندگی بہترکرنے اورسماجی ترقی پرصرف کریں۔میڈیا عوام میں تحمل،برداشت ،رواداری اور سماجی انصاف کے فروغ کے لیے کردار ادا کرے۔



پاک بھارت امن کانفرنس نئی دہلی میں اختتام پذیر 
پاکستان، بھارت اور جنوبی ایشیا میں قیام امن کے لیے ماہرین کی تربیت کے لیے دسویں  سالانہ پاک بھارت امن ؂ ورکشاپ نئی دہلی میں اٖختتام پذیر ہو گئی ہے۔ کانفرنس کا انعقاد ممتاز انڈین تھنک ٹینک وویمن ان سیکورٹی کنفلکٹ منیجمنٹ اینڈ پیس (وسکمپ) نے کیا تھا اور اس میں پاکستان، بھارت اور دیگر ممالک سے پچاس کے لگ بھگ مندوبین نے شرکت کی ہے جن میں انسا نی حقوق کے کارکن، دانشور،تنازعات کے ماہرین اور سول سوسائٹی کے اراکین  شامل تھے۔انسانی ترقی اور قیام امن کے لیے کوشاں ادارے پریس فارپیس کے ڈائرکٹر راجہ وسیم نے آزادکشمیرکی کی نمائندگی کرتے ہوئے شرکت کی اور تنازعہ کشمیرکے جنوبی ایشیا پر ہونے والے انسانی ، معاشی اور سیاسی اثرات پر روشنی ڈالی اور کانفرنس کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ کشمیرکے پرامن حل کے لیے کشمیری عوام کی امنگووں کواولیت دی جائےْ ۔کشمیریوں کے خواہشات سے ہم آئنگ منصفانہ حل ہی خطے میں دیرپا امن کی خشت اول ہے۔