صحا فی خواجہ فیاض حسین

فیاض حسین کو ایک من گھڑت مقدمے میں ملوث کرکے حکومت نے سچ کی آواز کو دبانے کی ناکام کوشش کی ہے۔ 

پریس فارپیس نے اعلان کیا ہے کہ اگرفیاض حسین کو فوری نہ کیا گیا تو انسانی حقوق اور آزادی صحافت کی علمبردار عالمی تنظیموں اور اداروں تک آواز اٹھائی جائے گی اور اس واقعے کے خلاف شدید احتجاج کیا جائے گا۔
پریس فارپیس نے وزیراعظم پاکستان کے دورہ نیلم ویلی کے دوران اٹھمقام کے مقام پر کے ایچ خورشید،خان عبدالحمید خان اور دوسری تاریخی شخصیات کے ہاتھوں لگائے گئے درختوں کی کٹائی کو افسوسس نا ک قرار دیتے ہوےٗ مطالبہ کیاہے کہ واقعے میں ملوث افراد کو قانون کے کٹہرے میں لایاجائے۔

 
مظفرآباد ( ۲۷ جولائی ): پریس فار پیس نے وادی نیلم کے صحا فی خواجہ فیاض حسین کی گرفتاری کی شدید مذمت کرتے ہوئے ان کی فوری رہائی کامطالبہ کیاہے ۔تنظیم کے ترجمان کی طرف سے جاری کردہ بیان میں کہا گیا ہے کہ سرکاری اداروں کی بے ضابطگیوں اور وزیراعظم پاکستان کے دورہء نیلم ویلی کے دوران تاریخی شخصیات کے ہاتھوں لگائے گئے درختوں کی کٹائی کی تصاویر چھاپنے کی پاداش میں مذکورہ صحافی کو گرفتار کرنا آزادی صحافت کے منافی اقدام ہے۔
صحا فی خواجہ فیاض حسین کو ایک من گھڑت مقدمے میں ملوث کرکے حکومت نے سچ کی آواز کو دبانے کی ناکام کوشش کی ہے۔ ترجمان نے مطالبہ کیا ہے کہ حکومت فیاض حسین کو فوری رہا کرے اور الزامات کی جانچ پڑتال کے لیے جوڈیشل کیمشن تشکیل دیا جائے۔

Comments