کالعدم تنظیموں کی سرگرمیاں روکی جائیں

کالعدم تنظیموں کی سرگرمیاں روکی جائی
غیرمقامی افراد مظفرآباد میں فلاحی سرگرمیوں کی آڑ میں نئی تعمیرات کر رہے ہیں
پاکستان کے زیر انتظام کشمیر میں سرگرم ایک غیرسرکاری تنظیمپریس فار پیس نے وزیر اعظم سید یوسف رضا گیلانی کو ایک خط میں کالعدم شدت پسند تنظیموں کی اس علاقے میں بڑھتی ہوئی سرگرمیاں روکنے کی اپیل کی ہے۔
پریس فار پیس کے سربراہ ظفر اقبال نے اس مکتوب میں وزیر اعظم کی توجہ اس جانب مبذول کروانے کی کوشش کی ہے تاکہ بقول ان کے مقامی آبادی کو دہشت گردی سے بچایا جاسکے۔ تنظیم کے مطابق بعض غیرمقامی مشتبہ افراد کتھیاں پیراں، اٹھ مقام، شاہ کوٹ، دودنیال اور ضلع نیلم کے قرب وجوار میں دیہات میں کیمپس قائم کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔
ظفر اقبال کے مطابق اس خطے میں عوام بھارت اور پاکستان کے درمیان جنگ بندی کے بعد نئی زندگی استوار کرنے کی جدوجہد میں مصروف ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ غیرمقامی افراد مظفرآباد میں فلاحی سرگرمیوں کی آڑ میں نئی تعمیرات کر رہے ہیں۔ انہوں نے یاد دلایا کہ چند برس قبل ایک کشمیری نوجوان کی ہلاکت مبینہ طور پر کالعدم تنظیم جماعت الدعوۃ کے ہاتھوں ہوئی تھی۔ لہٰذا ایک مرتبہ پھر مقامی آبادی اپنے آپ کو غیرمحفوظ تصور کر رہی ہے۔
تنظیم کے مطابق بعض غیرمقامی مشتبہ افراد کتھیاں پیراں، اٹھ مقام، شاہ کوٹ، دودنیال اور ضلع نیلم کے قرب وجوار میں دیہات میں کیمپس قائم کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔
پریس فار پیس کا مؤقف ہے کہ کئی پاکستانی اہلکار جماعت الدعوۃ کو  خطے میں امن اور آشتی کے لیے شدید خطرہ تصور کرتے ہیں

Comments